تیرا تے گلزار سجن اے ، بھانویں ہور اظہار بڑے نیں

ڈاکٹر اظہار احمد گلزار۔۔۔۔۔دی پنجابی شاعری۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔تیرا تے گلزار سجن اے ، بھانویں ہور اظہار بڑے نیں۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ بحوالہ : “نیندوں سکھنی اکھ “۔۔پنجابی شعری مجموعہ ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔دیس چہ رشوت گھٹ نہیں سکدیعادت بھیڑی ہٹ نہیں سکدی ہار جاوے جو ہمت اپنیفوج محاذ تے ڈٹ نہیں سکدی ایس عہد وچ بناں سفارشزندگی سوکھی کٹ نہیں سکدی طوطا مینا مزید پڑھیں

نور محمّد نور کپور تھلوی ۔۔دی مشہور پنجابی نظم ” برسات ” ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔بحوالہ: کلیات نور (پنجابی شاعری)

سن اشاعت :2002مرتب : اظہار احمد گلزار۔………………………………………………………………………………………..آ گئی کالی گھٹ مونہہ زوربدلاں پایا ڈاہڈا شورنیلا تنبو لگ پیا چوونکن من ، کن من لگ پئی ہوونبجلی چمکے بدل گجےحبس تے گرمی دونویں بھجےلو ہن ورھ پیا موہلے دھاریسب پرنالے ہو گئے جاریکنے خوش پھر دے نیں بچےضد دے پورے عقلوں کچےپانی دے وچ نہاو ندے مزید پڑھیں

*نور محمّد نور کپور تھلوی۔۔دی شہرہ آفاق پنجابی نظم “پنجاب دا ونڈ ویلا”۔۔۔(اک تاثر)*

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔پیشکش : اظہار احمد گلزار۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔بھڑ کے سی دیوے جنگ دےتھاں تھاں تے بھانبڑ اگ دےدشمن نے تیغاں کھچیاںسڑکاں تے لاشاں وچھیاںمعصوم بچے ولکدےپھر دے لہو وچ تلکدےلے کے اجل توں پرچیاںسینے چ کھبیاں برچھیاںمانواں نوں غنڈے لے گئےآساں دے کوٹھے ڈھے گئےپیواں نوں پتر چھڈ گئےرشتے نوں اکا وڈھ گئےبھیناں توں بھائی بچھڑےپھر نہ ملے مزید پڑھیں

ادب سرائے کے تین سو آٹھویں عالمی غزلیہ و نظمیہ مشاعرے کی رپورٹ

ادب سرائے ساہیوال نے برسہا برس سے علم و ادب کی آبیاری کی۔جہاں مشہور اور جید شعراء و ادباء کی عزت و توقیر کی وہاں نئے آنے والے شاعروں کی حوصلہ افزائی. اور تربیت کا بھی اہتمام کیا۔ادب سرائے ساہیوال کا تین سو آٹھواں غزلیہ اور نظمیہ آن لائن ویڈیو مشاعرہ بھی اسی سلسلے کی مزید پڑھیں

نعت پاک / نذرانہ عقیدت

تری الفت کے نغمے گا رہا ہوںصلے میں دین و دنیا پا رہا ہوںمرے آقا! بھلا کیا اور مانگوںتمھارا ہی دیا تو کھا رہا ہوںوظیفہ بس یہی شام و سحر ہےمحمّد نام لیتا جا رہا ہوںتمنا تھی ترےروضے پہ ہوتابہت ہوں دور اور گھبرا رہا ہوںلگے ہیں زخم فرقت کے یہ دل پربرابر ان کو مزید پڑھیں

ادب سرائے ساہیوال

ادب سرائے ساہیوال عرصہ دراز سے ادبی و ثقافتی سرگرمیوں کے انعقاد میں پیش پیش رہا۔اس کے بانی و صدر پروفیسر سید ریاض حسین ذیدی صدارتی و قومی سیرت ایوارڈ تافتہ مشہور نعت گو شاعر ہیں۔لاک ڈاون کی وجہ سے جب ساری سرگرمیاں معطل ہو گئییں وہاں ماہانہ مشاعروں کا سلسلہ بھی روکنا پڑا۔لیکن پھر مزید پڑھیں

غزل

ترا چہرہ بناۓ جا رہا ہےکوئی مجھ کو مٹائے جا رہا ہے مرا سر یوں نہیں گھوما ہوا ہےکوئی دنیا گھماۓ جا رہا ہے کبھی تم سوچنا کہ کون ہم میںتعلّق کو نبھاۓ جا رہا ہے ترے چہرے سے تو لگتا یہی ہےکوئی تو غم چھپاۓ جا رہا ہے مرے گھر کو ہے جب سے مزید پڑھیں

ازل سے میں نے ہاں کر دی

عمر ملک ازل سے میں نے ہاں کر دی وفا کی انتہا کر دی  ستارے تھے جو گردش میں جفا اس نے سدا کر دی میری مجبوریاں ہیں یہ  دکھوں کو بھی خوشی کر دی  سزا ہم کو ملی اپنے ناکردہ گناہوں کی وفاؤں کے صلے اس نے ہمیشہ سے سزا لکھ دی

غزل

یہ آنکھیں ہیں میری تو خواب انکے بےپردہ ملتے ہیں حجاب ان کے سب تذکروں میں تو نمایاں میرے قصے زباں پر بے حساب ان کے چاہت ہے انہیں کھیلیں وہ کھلونے دل و جاں میرے انتخاب ان کے وہ آج ہم سے ہیں خفا کیوں کر کس کام کے ہیں اجتناب ان کے بیشک مزید پڑھیں