وفاقی حکومت نے وزیر خزانہ شوکت ترین کو سینیٹر بنانے کا فیصلہ کرلیا

قانون کے مطابق شوکت ترین بغیر منتخب ہوئے صرف چھ ماہ ہی وفاقی وزیر رہ سکتے ہیں انکی یہ مدت 16 اکتوبر کو ختم ہو رہی ہے

وفاقی حکومت نے وزیر خزانہ شوکت ترین کو سینیٹر بنانے کا فیصلہ کر لیا، یقین دلاتا ہوں یہ وزیرخزانہ کہیں نہیں جارہا، پہلے بھی وزیرخزانہ اور سینیٹر رہ چکا ہوں۔

اسلام آباد میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے وفاقی وزیر اطلاعات فواد چودھری کا کہنا تھا کہ وفاقی وزیر خزانہ شوکت ترین کو سینیٹر بنانے کا فیصلہ کیا ہے۔ قومی اسمبلی میں خطاب کرتے ہوئے شوکت ترین کا کہنا تھا کہ یقین دلاتا ہوں یہ وزیرخزانہ کہیں نہیں جارہا، پہلے بھی وزیرخزانہ اور سینیٹر رہ چکا ہوں، مجھے سینیٹر بنانے کی کوشش ہو رہی ہے، یہ وزیرخزانہ تو تنخواہ بھی نہیں لیتا۔

یاد رہے کہ اگر شوکت ترین آئندہ دو ہفتوں میں سنیٹر نہیں بنتے تو وزارت سے ہاتھ دھونے پڑیں گے۔ قانون کے مطابق شوکت ترین بغیر منتخب ہوئے صرف چھ ماہ ہی وفاقی وزیر رہ سکتے ہیں انکی یہ مدت 16 اکتوبر کو ختم ہو رہی ہے۔ خیال رہے کہ شوکت ترین کو 16 اپریل کو وزیراعظم عمران خان نے حماد اظہر کی جگہ وزیر خزانہ تعینات کیا تھا۔ اگر وہ اگلے دو ہفتوں تک سنیٹر نہیں بنتے تو انہوں وزارت چھوڑنی پڑے گی تاہم انہیں مشیر خزانہ یا معاون خصوصی تعینات کیا جا سکتا ہے۔

Visit To News Source
0 0 votes
Article Rating
Subscribe
Notify of
guest
0 Comments
Inline Feedbacks
View all comments