خاتون کو زیادتی اور قتل کرنے کا کیس، برطانوی پولیس کو تاحیات قید کی سزا

پولیس افسرنے خاتون کو 3 مارچ کو زبردستی گاڑی میں بٹھایا جس کے بعد خاتون کی لاش تقریبا 50 میل دور کے علاقے سے برآمد ہوئی

خاتون کو زیادتی اور قتل کرنے کے کیس میں برطانوی عدالت نے فیصلہ سناتے ہوئے برطانوی پولیس افسر کو تاحیات قید کی سزا سنادی ہے۔

انٹرنیشنل میڈیا کے مطابق برطانوی عدالت نے کیس کا فیصلہ سنایا جس میں 33 سالہ خاتون سارا ایورڈ کی جعلی گرفتاری کے بعد زیادتی اور قتل کے کیس میں 48 سالہ پولیس افسر کو تاحیات قید کی سزا سنائی گئی۔ 33 سالہ سارا ایورڈ نامی خاتون برطانیہ میں لاک ڈان کے دوران لاپتا ہوئی تھیں جس کے بعد برطانیہ میں لاپتا شخص سے متعلق تفتیش میں اس کیس کو انتہائی اہمیت حاصل ہوئی جب کہ واقعے کے بعد برطانیہ میں احتجاج کیا گیا اور سڑکوں پر خواتین کے تحفظ پر نئی بحث چھڑ گئی۔

انٹرنیشنل میڈیا کے مطابق 48 سالہ پولیس افسر وائن کوزنس لندن میٹرو پولیٹن پولیس کے ایلیٹ ڈپلومیٹک پروٹیکشن یونٹ میں تعینات تھا جس نے جولائی میں خاتون کو اغوا، زیادتی اور پھر قتل کرنے کا اعتراف کیا تھا۔ کیس کی سماعت کے دوران بتایا گیا کہ پولیس افسر وائن کوزنس نے خاتون کو 3 مارچ کو زبردستی گاڑی میں بٹھایا جس کے بعد خاتون کی لاش تقریبا 50 میل دور کے علاقے سے برآمد ہوئی جب کہ پوسٹ مارٹم رپورٹ میں یہ بات سامنے آئی کہ خاتون کی موت گلا دبا کر مارنے سے ہوئی۔

Visit To News Source
0 0 votes
Article Rating
Subscribe
Notify of
guest
0 Comments
Inline Feedbacks
View all comments