پیسے نہیں تو یہاں سے کھانا لے جائیں۔۔ پاکستانی لڑکی کی کہانی جس نے امریکہ میں ایسا ہوٹل کھولا جہاں غریبوں کو مفت کھانا بھی کھلایا جاتا ہے

“اگر آپ بھوکے ہیں اور کھانا خریدنے کے پیسے نہیں تو آپ یہاں آکر بغیر کسی ہچکچاہٹ کے “فری باکس“ آرڈر کریں۔ آپ کو بنا کسی سوال جواب کے کھانا دے دیا جائے گا“

یہ خوبصورت الفاظ لکھے ہیں امریکہ کے نیو جرسی میں بنے “کراچی کیفے“ میں جہاں کی مالک پاکستان سے تعلق رکھنے والی عینی خان ہیں۔ اس ہوٹل کی دیوار پر ایک بورڈ آویزاں ہے جس میں غریب اور مستحق افراد کے لئے مفت کھانے کی پیش کش کی گئی ہے اور سب سے بڑی بات یہ ہے کہ ایسے لوگوں کی عزتِ نفس کا خیال رکھتے ہوئے کھانا مانگنے کے بجائے آرڈر دیا جاتا ہے۔ عینی خان کا یہ کراچی کیفے اپنی اور کن باتوں کے لئے مشہور ہے آئیے جانتے ہیں۔

دیسی اور روایتی کلچر

کراچی کیفے میں داخل ہوتے ہی احساس ہوتا ہے جیسے پاکستان کے کسی گاؤں میں آگئے ہیں۔ ہوٹل کی تمام دیواریں خوبصورت اور شوخ رنگوں سے مزین ہیں اس کے علاوہ جابجا دیواروں پر پاکستان کا مشہور ٹرک آرٹ چسپاں ہے، فریم شدہ اردو اخبارات کی کٹنگز اور دیسی روایتی انداز اپنائے باورچی بالکل پاکستان کا منظر ہی پیش کرتے ہیں۔ اتنا ہی نہیں کیفے میں ملنے والا کھانے میں پاکستانی کھانا بھی شامل ہوتا ہے اور اسی انداز سے پیش کیا جاتا ہے جیسے کسی پاکستانی ڈھابے پر۔

پاکستانی خاص دیوار

عینی خان نے ایک دیوار پاکستان کے لئے خاص طور پر مخصوص کر رکھی ہے۔ اس دیوار پر پاکستانی جھنڈے کے علاوہ قومی ہیروز کی تصاویر اور ان کے بارے میں معلومات فراہم کی گئی ہے۔

مجھے اپنے پاکستانی ہونے پر فخر ہے

عینی خان تقریباً اکیس برس پہلے امریکہ شفٹ ہوگئی تھیں لیکن پاکستان سے ان کا لگاؤ ان کے ہوٹل کی صورت میں دیکھا جاسکتا ہے۔ عینی کا کہنا ہے کہ “میں ایک پاکستانی ہوں اور مجھے اس بات پر فخر ہے۔ میں روایتی کھانوں کے ذائقے اور کلچر کے زریعے دنیا بھر میں پاکستان کا خوبصورت چہرہ اجاگر کرنا چاہتی ہوں“۔ بلاشبہ عینی خان ان محنتی اور خوش قسمت افراد میں سے ایک ہیں جو اپنے بلند ارادوں اور نیک نیتی کی وجہ سے ملک کا نا روشن کرتے ہیں۔

News Source
0 0 votes
Article Rating
Subscribe
Notify of
guest
0 Comments
Inline Feedbacks
View all comments