سابق صدر آصف زرداری نے مسلم لیگ ق کو کیا پیش کش کر ڈالی؟ آگے سے چوہدری شجاعت حسین نے انہیں کیا جواب دیا؟ حیران کن رپورٹ منظر عام پر آگئی

ہمارا معاہدہ ہے،5 سال حکومت کا ساتھ نہیں چھوڑ سکتے‘ نیا تجربہ نہ کریں، پی ڈی ایم کے اپنے اندر اختلافات ہیں: چوہدری شجاعت حسین

سابق صدر آصف زرداری نے مسلم لیگ ق کو کیا پیش کش کر ڈالی؟ آگے سے چوہدری شجاعت حسین نے انہیں کیا جواب دیا؟ حیران کن رپورٹ منظر عام پر آگئی ہے۔

تفصیلات کے مطابق گذشتہ روز سابق صدر آصف علی زرداری نے پاکستان مسلم لیگ کے صدرو سابق وزیراعظم چودھری شجاعت حسین اور قائم مقام گورنر پنجاب چودھری پرویزالہی سے ان کی رہائش گاہ پر ملاقات کی۔ ملاقات میں وفاقی وزرا طارق بشیر چیمہ، مونس الہی، ایم این اے سالک حسین، شافع حسین اور رخسانہ بنگش بھی شریک تھے۔ ملاقات میں ملکی سیاسی صورتحال سمیت باہمی دلچسپی کے دیگر امور پر تفصیلی تبادلہ خیال کیا گیا۔ آصف علی زرداری نے چودھری شجاعت حسین کی خیریت دریافت کی اور ان کی جلد صحت یابی کیلئے نیک خواہشات کا اظہار بھی کیا۔ آصف زرداری کا استقبال چودھری پرویزالہی، مونس الہی، طارق بشیر چیمہ اور سالک حسین نے کیا۔رپورٹ کے مطابق آصف علی زرداری نے چوہدری برادران کو سیاسی تبدیلی کا ایجنڈا پیش کیا اور ق لیگ کو پنجاب میں اہم عہدہ دینے کی پیشکش کی جس پر چوہدری شجاعت نے معذرت کرتے ہوئے کہا کہ ہمارا معاہدہ ہے،5 سال حکومت کا ساتھ نہیں چھوڑ سکتے،چوہدری شجاعت نے کہا کہ نیا تجربہ نہ کریں، پی ڈی ایم کے اپنے اندر اختلافات ہیں۔ ملاقات کے دوران چوہدری شجاعت نے واضح طور پر حکومت کے خلاف اپوزیشن کا ساتھ دینے سے معذرت کی،اور کہا کہ پانچ سال تک وہ حکومت کا ساتھ دینے کے پابند رہیں گے۔حکومتی اتحادی ہیں آئینی مدت پوری ہونے تک ساتھ دیں گے۔

0 0 votes
Article Rating
Subscribe
Notify of
guest
0 Comments
Inline Feedbacks
View all comments