زرداری چوری کی چیک بُک لے کر سیاستدان خریدتے ہیں، یہ سب چور ہیں ۔۔ عمران خان نے حکومت پر طنز کرنے والوں کی خبر لے لی

عمران خان اور اپوزیشن کے درمیان لفظی جنگ جاری رہتی ہے۔ کبھی اپوزیشن عمران خان کی حکومت کو تنقید کا نشانہ بناتی ہے تو کبھی عمران خان ان کو آڑے ہاتھوں لیتے ہیں۔ حال ہی میں عمران خان فیصل آباد میں قومی صحت کارڈ کی تقریب میں اپوزیشن پر برس پڑے۔ انہوں نے کہا کہ زرداری چوری کی چیک بک لے کر کبھی بھی کسی بھی سیاستدان کو خرید لیتے ہیں۔ 30 سال سے ملک پر حکومت کرنے والوں سے کوئی پوچھے کہ ملک بنانے کا مقصد یہ تو نہیں تھا کہ پیسے بٹوریں، جائیدادیں بنائیں، شریف اور زرداری امیر ہو جائیں۔

وزیرِاعظم نے مذید کہا کہ: ” چوروں کے ٹولوں کا کھانسی کا علاج بھی باہر ہوتا ہے۔ جن لوگوں پر عوام کے علاج کی ذمے داری تھی وہ علاج کے لیے لندن جا رہے ہیں۔ سندھ کے اسپتالوں کا حال کتنا برا ہے۔ حکومت کا پنجاب میں 400 ارب روپے سے صحت کارڈ کا پروگرام شروع کرنا آسان نہیں تھا۔ کسی حکومت کے لیے آسان نہیں کہ اتنی رقم ایک پروجیکٹ پر لگائے۔ ہم نے ساڑھے تین سال میں بڑے بڑے پروجیکٹ آپ کے سامنے لائے، نئی انڈسٹریز واضح کیں۔ ” عمران خان نے بلاول بھٹو زرداری پر تنقید کرتے ہوئے کہا کہ : ” سندھ میں ایک پارٹی کے لیڈر کو 13 سال ہو گئے ان کو اردو بھی صحیح بولنی نہیں آئی۔ پھر کہتے ہیں کہ بارش ہوتا ہے تو پانی آتا ہے، وہ کہتے ہیں کہ ہم ہیلتھ انشورنش پر پیسے خرچ نہیں کریں گے۔ میں نے ان کے خلاف 25 سال پہلے جہاد شروع کیا تھا۔ ”

مذید کہا کہ: ” میرے پاس شہرت اور دولت سب کچھ تھا، لیکن میں ان لٹیروں کا مقابلہ کرنے آیا، ان کے ہوتے ہوئے پاکستان کا کوئی مستقبل نہیں، جب تک کوئی ملک اپنے نظریے پر نہیں جاتا کامیاب نہیں ہو سکتا۔ جس ملک کا پیسہ چوری ہو کر باہر چلا جائے اس ملک کا کیا مستقبل ہو گا؟ ”

News Source

0 0 votes
Article Rating
Subscribe
Notify of
guest
0 Comments
Inline Feedbacks
View all comments