بچہ پیدا ہوتے ہی کون سی چیز چٹائی جاتی ہے جس سے وہ بہت سی بیماریوں سے بچ جاتا ہے۔۔ سائنسی نے بھی تحقیق کرکے نبی کی سنت کو مان لیا

ہم اسلام کو دین فطرت مانتے ہیں کیونکہ ہمارا ایمان ہے کہ اسلام اور حضرت محمد صلی اللہ علیہ و آلہ وسلم کی بتائی ہر بات میں کوئی حکمت پوشیدہ ہے جسے ہر گزرتے وقت کے ساتھ سائنس بھی اپنی تحقیق سے تسلیم کرتی جارہی ہے۔

حال یہ میں ایک ایسی تحقیق سامنے آئی ہے جس میں حضرت محمد مصطفیٰ صلی اللہ و علیہ وآلہ وسلم کی 1400 سال پہلے بتائی گئی سنت کو سائنس نے ایک بہت بڑی بیماری سے بچنے کے لئے مفید قرار دے دیا ہے۔

بچوں کو گھٹی دینے کی سنت

نیوزی لینڈ میں کی گئی تحقیق کی روشنی میں یہ بات سامنے آتی ہے کہ 10 میں سے ایک وقت سے پہلے پہلے ہونے والے بچے میں شوگر لیول کم ہوسکتا ہے جس کا علاج اگر فوری طور پر نہ کیا جائے تو اس کے سنگین نتائج بچے کی زندگی پر کافی عرصے تک رہ سکتے ہیں اور بچہ دماغی بیماریوں میں بھی مبتلا ہوسکتا ہے۔ جب کہ نبی صلی اللہ علیہ و آلہ وسلم نے 1400 سال پہلے ہی نومولود بچے کے لئے “تہنیک“ (گھٹی) کی سنت کو لازمی قرار دیا تھا۔ اس سنت کے مطابق کھجور کا ایک ٹکڑا نرم کرکے بچے کے منہ پر رگڑنا ہوتا ہے۔ ماہرین کے مطابق اس سنت سے بچوں کے خون میں شوگر کی سطح فوری طور پر بہتر ہوجاتی ہے۔

ہائپوگلیسیمیا

ماہرین کے مطابق اس بیماری کا نام ہائپوگلیسیمیا ہے جس میں خون میں شوگر کا تناسب خطرناک حد تک گرجاتا ہے اور اس کا فوری علاج کرنا ضروری ہے کیونکہ اس بیماری میں بچے کے مختلف اعضاء پر اس کا اثر پڑتا ہے یہاں تک کہ دماغ بھی متاثر ہوسکتا ہے۔ ڈرپ سے بچوں کی اس کیفیت کا علاج نہ صرف کافی مہنگا ہے بلکہ اس میں کافی وقت بھی درکار ہوتا ہے۔ جب کہ سنت پر عمل کرکے بروقت بچے کی جان بچائی جاسکتی ہے۔ گھٹی دینے کے لئے کھجور کے علاوہ شہد یا کوئی دوسری میٹھی چیز بھی استعمال کی جاتی ہے۔

News Source

0 0 votes
Article Rating
Subscribe
Notify of
guest
0 Comments
Inline Feedbacks
View all comments