ہرے رنگ کی پتیاں کالی کیسے ہوجاتی ہیں؟ چائے کی پتی کے بارے میں دلچسپ معلومات

کام شروع کرنا سے پہلے ہم ایک پیالی چائے پینا ہر گز نہیں بھولتے۔ چائے ایسا انوکھا مشروب ہے جس کے بغیر کچھ لوگوں کی تو آنکھ ہی نہیں کھلتی۔ لیکن بہت کم لوگ اس بات سے واقف ہیں کہ بہت آسانی سے بننے والی یہ مزیدار چائے کن مراحل سے گزرتی ہوئی ہمارے اعصاب کو جگاتی ہے۔ آج کے اس آرٹیکل میں ہم آپ ک چائے کی کہانی بتائیں گے۔

پتی کو پیسنے کے مختلف مراحل

بھارت کی ریاست آسام میں چائے کے بڑے باغات موجود ہیں۔ یہاں مرد اور خواتین مل کر کام کرتے ہیں۔ سب سے پہلے چائے کی پتیوں کو توڑ کر باسکٹ میں ڈالا جاتا ہے جس کے بعد انھیں سکھایا جاتا ہے۔ وہ پتیاں جو نم رہ جائیں انھیں گرم ہوا والے پنکھے کے آگے رکھ کر دوبارہ سکھایا جاتا ہے جس کے بعد ان کو پیسنے کے لئے بھیجا جاتا ہے۔

سوندھا بنانے کے لئے پسی ہوئی پتی کو بھونا جاتا ہے

چائے کی پتیاں پیسنے کا مرحلہ ہاتھ سے نہیں بلکہ مختلف مشینوں کے ذریعے کیا جاتا ہے۔ کئی مراحل میں پتیاں پیس کر انھیں پاؤڈر بنا دیا جاتا ہے۔ جس کے بعد مشینوں کے ذریعے ہی چائے کو سوندھا پن دینے کے لئے انھیں بھونا جاتا ہے۔ یہی وہ وقت ہے جب چائے کی پتی کی رنگت ہرے سے تبدیل ہو کر سیاہ ہوجاتی ہے۔ لیکن ٹھہریے ابھی چائے تیار نہیں ہوئی۔

چائے کی پتی سے کچرا صاف کرنے کا مرحلہ

تیاری کے مراحل میں چائے میں دھول مٹی یا ہری پتی رہ گئی ہو اس کو صاف کرنے کے لئے بھی مشینیں موجود ہوتی ہیں۔ یہ مشینیں چائے کے موٹے اعلیٰ کوالٹی کے دانے اور چائے کا کچرا الگ کرتی جاتی ہیں۔ ایک ہی جگہ مختلف کوالٹی کی چائے تیار کی جاتی ہے اس کے بعد ہی ان کی پیکنگ کا مرحلہ شروع ہوتا ہے۔

News Source

0 0 votes
Article Rating
Subscribe
Notify of
guest
0 Comments
Inline Feedbacks
View all comments