سندہ حکومت سيلاب متاثرین کی بحالی کیلیے سنجيده نظر نہیں آرھی

لکہی غلام شاه (ڈیلی آغوش) سندہ حکومت سيلاب متاثرین کی بحالی کیلیے سنجيده نظر نہیں آرھی. مولانا غلام اللہ مھر.
جمعيّت علماء اسلام بغیر کسی فرق کے متأثرين کی خدمت کر رھی ھے. حافظ رفيق احمد شر
تفصيل کے مطابق کہ جمعيّت علماء اسلام تحصیل لکہی کے جنرل کائونسل کے اجلاس کو مولانا غلام الله مھر. حافظ رفيق احمد شر
نےخطاب کرتے ھوئے کہا کہ سندہ حکومت سيلاب متاثريں کی بحالی کیلئے سنجيده نھیں ھے وہ صرف اجلاسوں اور دوروں تک محدود ھے جبکہ گرائونڈ پر کچھ بھی نظر نھیں آرھا. حالت یہ ہیکہ سندہ اسيمبلی کا سپيکر بھی ميڈيا پر آکر کھتا ھیکہ گورنمينٹ کچھ بھی نہیں دے رھی،
ڊي سی شکارپور صاحب ھماری کال بھی اٹینڈ نھیں کر رھا.
اسی طرح کی باتیں ايم ايں اے غوث بخش مهر بھی کررہا ہے ،
تو پہر عام آدمی کا کیا حال ھوگا
ہم جمعيّت علماء اسلام کی پليٹ فارم پر اپنی مدد آپ کے تحت ھزاروں گھروں تک ضروريات زندگی کا سامان اور نقدرقم پہنچا رہے ہیں
یہ اجلاس سندہ حکومت سے مطالبہ کرتا ھے کہ سيلاب متاثرین کی بحالی کیلیے سنجيده کوششیں کی جائیں اور نقصانات کا ازالہ کرے تاکہ متاثرین جلد از جلد باعزت اپنے گهروں اور گائوں میں رھائش اختیار کریں.
يوسي سطح پر میڈیکل کیمپ کا انعقاد کیا جائے، مچر مار اسپرے کرایا جائے، زرعی زمین سے بارش کا پانی نکال کر زمین کوخریف فصل کے قابل بنایا جائے. کسانوں کو مفت بیج اور کھاد فراہم کیا جائے.
جبکہ اجلاس میں مولانا تاج محمد، مولانا محمد اسلم مھر حڪيم شاه نواز،محترم استاد عبدالمؤمن مھر ، مولانا رحيم بخش مھر ،حبيب ﷲ منگی. عبدالقدوس کہوسو مولانا محمد دائود ٹانوری ودیگر موجود تھے.
جاری کنندہ! عبدالقدوس پريس سيکريٹری جي يو آء تحصیل لکہی ضلع شکارپور

0 0 votes
Article Rating
Subscribe
Notify of
guest
0 Comments
Inline Feedbacks
View all comments