ٹہریں! ادرک لہسن کا پیسٹ آپ کو بیمار بھی کر سکتا ہے ۔۔۔ جانیئے اس کے 5 بڑے نقصانات

ہمارے یہاں خواتین ادرک لہسن کا پیسٹ تیار کرکے فریزر میں رکھ دیتی ہیں اور جب بھی کھانا بنانا ہوتا ہے نکال کر استعمال کر لیتی ہیں چاہے پھر وہ 2 ماہ سے استعمال ہو رہا ہو، چاہے 3 ماہ سے، بس کھانا آسانی اور جلدی سے بنانے کے لئے خواتین اس آسان ٹپ کو استعمال کرلیتی ہیں۔ اس سے یقیناً ان کا وقت بھی بچ جاتا ہے اور کھانا مزیدار بن جاتا ہے لیکن آج ہم آپ کو بتاتے ہیں کہ کیسے یہ پیسٹ آپ کو نقصان پہنچا رہا ہے۔

نقصانات کیوں ؟

٭ ادرک لہسن کے پیسٹ میں دراصل سوڈیئم میٹابیسولفائٹ پایا جاتا ہے اور ساتھ ہی اس میں سٹرک ایسڈ، سوڈیئم بینزوئیٹ اور سوڈیئم کلورائیڈ پایا جاتا ہے جو کہ ایک مدت تک تو آپ کو کوئی نقصان نہیں دیتا ہے لیکن اس کے بعد وہ آپ کو سنگین نقصان پہنچا سکتا ہے۔

کون سے نقصانات ہوتے ہیں؟

٭ اس سے آپ کے جگر پر ورم پر پڑ سکتا ہے اور اس کا کوئی حتمی وقت یا مدت نہیں ہے، اگر زیادہ استعمال کریں گے تو زیادہ ورم بھی پڑ سکتا ہے۔

٭ رحم میں رسولی کی شکایت ہوسکتی ہے جس کو ریسرچ فار نیوٹریٹنٹس کے ماہرین نے بھی اپنی تحقیق میں واضح کیا ہے۔

٭ کینسر جیسے جان لیوہ مرض میں بھی مبتلا ہو سکتے ہیں۔

٭ ڈپریشن بڑھنے کے خدشات لاحق ہو جاتے ہیں جو کہ شدید ہوتے ہیں۔

استعمال کیسے کریں؟ :

ادرک لہسن کے پیسٹ کو بہت زیادہ عرصے تک نہ رکھیں 1 ماہ کے بعد تو بلکل بھی نہیں۔ اتنا پیسٹ بنائیں کہ ایک ماہ کے اندر ہی استعمال کر سکیں۔

٭ اس کے علاوہ پیسٹ کو تیار کرتے وقت اس میں آدھا چمچ ہلدی کا استعمال ضرور کریں تاکہ ہلدی اس پیسٹ کو اینٹی بائیوٹکس خصوصیات کا حامل بنا سکے۔

٭ اس کو بنانے کے بعد جب فریزر میں رکھیں تو کسی پلاسٹک کی تھیلی میں بھی رکھ لیں یہ زیادہ مناسب رہے گا۔

0 0 votes
Article Rating
Subscribe
Notify of
guest
0 Comments
Inline Feedbacks
View all comments