ویسپا 70 سال گزرنے کے بعد بھی پرانا کیوں نہیں ہوا؟

دو پہیوں والی بہت معروف سواری ویسپا کو دوسری عالمی جنگ کے بعد اٹلی کی تعمیر نو، خواتین کی طاقت اور نوجوانوں میں مقبولیت سے جوڑا جاتا ہے۔ آئیے دیکھتے ہیں کہ ویسپا سات عشرے گزرنے کے بعد بھی پرانا کیوں نہیں ہوا۔ ویسپا کی پیدائشدنیا میں سب سے زیادہ شہرت حاصل کرنے والے اسکوٹر ویسپا کو 1946ء کے موسم بہار میں لوگوں کے سامنے پیش کیا گیا۔ اس اسکوٹر کا ڈیزائن سابق ایئرکرافٹ انجینیئر کوراڈینو ڈی اسکانیو نے تیار کیا جبکہ اسے معروف تاجر اینریکو پیاجیو نے پروموٹ کیا۔ عالمی جنگ کے بعد کے اٹلی میں دو پہیوں والی یہ سواری بہت جلد ہی مقبول عام ہو گئی۔

 بطخ، ویسپا کا ممکن نام بنتے بنتے رہ گیاابتدائی طور پر اسے ’پاپیرینو‘ کا نام دیا جانے والا تھا جس کا مطلب چھوٹی بطخ ہے۔ مگر تصویر میں نظر آنے والے اینریکو پیاجیو نے اسے دیکھتے ہی کہا کہ یہ ویسپا کی طرح لگتا ہے۔ اطالوی زبان میں ویسپا بِھڑ کو کہتے ہیں۔ 1950ء تک اطالوی درالحکومت روم ویسپا کی آوازوں سے گونج رہا تھا۔

 خواتین کی معروف سواریپیاجیو نے انتہائی ذہانت سے یہ سمجھ لیا تھا کہ نوجوان پروفیشنل خواتین کے لیے یہ سواری دلچسپی کا باعث ہو سکتی ہے کیونکہ وہ دھول مٹی، تیل یا سڑک کی دیگر غلاظتوں سے محفوظ رہتے ہوئے اس پر سواری کر سکتی ہیں۔ 1946ء میں شائع ہونے والی اس کی پہلی ایڈورٹائزمنٹ میں ایک خود مختار خاتون کو ویسپا پر اپنے کام پر جاتے ہوئے دکھایا گیا۔ یہ پیغام اچھی طرح سمجھا گیا اور خواتین میں یہ جلد ہی مقبول ہو گیا۔

 ہالی وُڈ کی طرف سے مددویسپا کو مقبول بنانے میں ہالی وُڈ کی ایک فلم نے بھی اہم کردار ادا کیا۔ 1953ء کی مشہور زمانہ فلم ’رومن ہالی ڈے‘ میں معروف اداکار آڈرے ہَیپبرن اور گریگوری پَیک کو ویسپا پر بیٹھ کر روم کی سڑکوں پر گھومتے دکھایا گیا۔

 مقبولیت کو چار چاند لگ گئے1979ء مین بننے والی مشہور فلم ’کوآڈروفینیا‘ میں برطانوی بینڈ ’دی ہُو‘ نے ایک بار پھر ویسپا کی مقبولیت میں اضافہ کر دیا۔ پھر یہ اسکوٹر ترقی پسند لوگوں کے لیے ایک لازمی سواری بن گیا۔

 نوجوانوں کی سواریبہت سے ممالک میں ویسپا چلانے کے لیے لائسنس کار چلانے کے لیے لائسنس کے مقابلے میں کہیں کم عمر میں حاصل کیا جا سکتا ہے۔ اٹلی میں آپ ویسپا جیسی سواری چلانے کا لائسنس 14 برس کی عمر میں حاصل کر سکتے ہیں جبکہ کار ڈرائیونگ کا لائسنس حاصل کرنے کے لیے کم از کم عمر 18 برس ہونا چاہیے۔ اسی باعث یہ اسکوٹر نوجوانوں کی سواری بن چکا ہے۔

 یہ کبھی پرانا نہیں ہوتااگر آج کوئی شخص ویسپا کو اپنی پرانی یادوں کے دریچے سے دیکھے تو یہ ہِپیوں اور ہر عمر کے غیر مقلدوں کی سواری رہی ہے۔ 2015ء میں منائے جانے والے ’ویسپا ورلڈ ڈیز‘ کے موقع پر دنیا کے 32 ممالک سے تعلق رکھنے والے قریب 5000 ویسپا مالکان کروشیا کے شہر بائیوگراڈ میں اپنے شوق کے اظہار کے لیے جمع ہوئے۔

0 0 votes
Article Rating
Subscribe
Notify of
guest
0 Comments
Inline Feedbacks
View all comments