مجھے پاکستان کو ورلڈ کپ 2011ء فائنل تک پہنچانے کے موقع سے محروم کیا گیا :شعیب اختر

10 سال پہلے پاکستان اور بھارت آئی سی سی ورلڈ کپ 2011ء کے سیمی فائنل میں آمنے سامنے آئے تھے

لاہور (اردو پوائنٹ تازہ ترین اخبار ۔ یکم اپریل 2021ء ) 10 سال پہلے پاکستان اور بھارت آئی سی سی ورلڈ کپ 2011ء کے سیمی فائنل میں آمنے سامنے آئے تھے جس نے دنیا بھر میں کروڑوں شائقین کو اپنی طرف متوجہ کیا تاہم بدقسمتی سے پاکستان میچ ہار گیا۔ شعیب اختر کے خیال میں پاکستان کو فائنل میں لے جانے کے لئے انہیں ’موقع دینےسے انکار‘ کیا گیا۔ سابق فاسٹ بائولر نے ایک ٹویٹ میں لکھا کہ ’’جس دن مجھے پاکستان کو ورلڈ کپ فائنل میں لے جانے کے موقع سے انکار کیا گیا تھا‘‘۔

عیب اختر 30 مارچ 2011ء کو بھارت اور پاکستان کے مابین ورلڈ کپ سیمی فائنل ٹاکرے پر ایک کرکٹ ویب سائٹ کے تھرو بیک ٹویٹ پر ردعمل دے رہے تھے۔ یہ شعیب اختر کا آخری ورلڈ کپ تھا جس کے بعد انہوں نے کرکٹ سے ریٹائرمنٹ لے لی تھی ۔ اس میچ میں بھارت نے وکٹ کیپر ایم ایس دھونی کی قیادت میں پاکستان کو 29 رنز سے شکست دے کر سری لنکا کے خلاف فائنل کے لیے کوالیفائی کیا تھا۔ میزبان ٹیم نے پہلے بیٹنگ کا فیصلہ کرنے کے بعد 9 وکٹوں پر 260 رنز بنائے تھے۔ ہدف اس سے بھی کم ہوسکتا تھا اگر پاکستان اننگز کے دوران چار بار سچن ٹنڈولکر کا کیچ نہ گراتا، میچ کے دوران ’لٹل ماسٹر‘ نے 85 رنز بنائے۔ پاکستان کی جانب سے وہاب ریاض نے پانچ وکٹیں حاصل کیں۔ قومی ٹیم ہدف کے تعاقب میں مسلسل وکٹیں کھوتی رہی اور صرف مصباح الحق نصف سنچری سکور کرنے میں کامیاب ہوئے۔

0 0 votes
Article Rating
Subscribe
Notify of
guest
0 Comments
Inline Feedbacks
View all comments