واٹس ایپ کی آخری رسومات کے چرچے کیوں ہو رہے ہیں؟

حال ہی میں پیغام رسائی کی ایپلیکیشن واٹس ایپ کی جانب سے دنیا بھر کے صارفین کے لئے نئی پرائیویسی پالیسی متعارف کروائی گئی ہے جس کے بعد واٹس ایپ یوسرز نے اس کے متبادل کے طور فری میسجنگ، ویڈیو کالنگ اور وائس کالنگ کے لیے دیگر ایپس کی طرف رخ کرنا شروع کردیا ہے۔

پیغام رسانی، ویڈیو اور وائس کالنگ کی دیگر ایپس میں ٹیلی گرام اور سگنل سرفہرست ہیں جو کہ ان دنوں تیزی سے مقبول ہورہی ہیں اور کئی لوگ انہیں واٹس ایپ کے متبادل کے طور پر دیکھ رہے ہیں۔

واٹس ایپ کی نئی پالیسی کے خلاف سوشل میڈیا سائٹس پر صارفین اپنے غم و غصے اور تشویش کا اظہار کررہے ہیں اور واٹس ایپ کی مالک کمپنی فیس بک کو بھی تنقید کا نشانہ بنایا جارہا ہے اور واٹس ایپ پر مزاحیہ میمز بھی بنائی جارہی ہیں۔

ایسے میں فری میسجنگ ایپلیکیسن ٹیلی گرام نے بھی ٹوئٹر پر ایک طنزیہ پوسٹ کی ہے ، پوسٹ میں گھانا کے معروف تابوت بردار افراد کو دکھایا گیاہے جو کہ رقص کرتے ہوئے واٹس ایپ کا جنازہ لے کر جارہے ہیں اور تابوت کے سامنے واٹس ایپ کی پرائیویسی پالیسی کا پیغام دکھایا گیا ہے۔

ایک اور ٹوئٹ میں ٹیلی گرام نے صارفین پر زور دیا ہے کہ وہ پریشان مت ہوں اس کا علاج ہے اور علاج یہ ہے کہ وہ واٹس ایپ ڈیلیٹ کردیں۔

Image
0 0 votes
Article Rating
Subscribe
Notify of
guest
0 Comments
Inline Feedbacks
View all comments