سرکاری فنڈز میں کتنے کروڑ کے گھپلے ہوئے؟ کون کون اس گھناؤنے دھندے میں ملوث نکلا؟ تمام کردار بے نقاب ہو گئے، حکومتی حلقوں میں کھلبلی مچ گئی

نیب نے بلوچستان میں 75 کروڑ کے سرکاری فنڈز میں مبینہ غبن اور اختیارات کے ناجائز استعمال پر تحقیقات شروع کر دی ہیں

سرکاری فنڈز میں کتنے کروڑ کے گھپلے ہوئے؟ کون کون اس گھناؤنے دھندے میں ملوث نکلا؟ تمام کردار بے نقاب ہو گئے، حکومتی حلقوں میں کھلبلی مچ گئی۔

ذرائع کے مطابق ڈپٹی کمشنر لسبیلہ نے سرکاری خزانے 75 کروڑ روپے نیشنل بنک سے کراچی کے ایک پرائیوٹ بنک میں جمع کرا دیئے تھے۔ جس پر صوبائی محکمہ خزانے نے کارروائی کرتے ہوئے ڈپٹی کمشنر لسبیلہ کو سرکاری خزانے کے 75کروڑ روپے واپس نیشنل بنک اوتھل برانچ میں جمع کرانے کا حکم دے دیا۔ ذرائع نے بتایا ہے کہ حکومت بلوچستان نے زمینوں کے معاوضے کے حوالے سے پونے ایک ارب (75کروڑ روپے)کی خطیر رقم گزشتہ سال ڈپٹی کمشنر لسبیلہ کے سرکاری اکاؤنٹ میں بھجوائی۔ تاہم ذرائع کے مطابق ڈپٹی کمشنر آفس اور محکمہ خزانہ کے بعض افسران کی مبینہ ملی بھگت سے ایک مبہم قسم کا اجازت نامہ حاصل کیا گیا جس کے تحت ڈپٹی کمشنر لسبیلہ کے دفتر نے 75کروڑ روپے کی مذکورہ رقم جو کہ امانت کے طور پر انکے سرکاری اکاؤنٹ میں منتقل کی گئی تھی اسے کراچی میں اپنابنک کے نام سے واقع نجی بنک میں جمع کرادیئے گئے۔

0 0 vote
Article Rating
Subscribe
Notify of
guest
0 Comments
Inline Feedbacks
View all comments