کانٹا چبھ جائے یا آنکھ میں کچھ چلا جائے۔۔۔ فوری طبی امداد کے وہ طریقے جو سب کے لئے جاننا بہت ضروری ہیں

روزمرہ زندگی میں ایسی بہت سی صورتحال سامنے آتی ہیں جب ہمیں یا کسی اور کو فوری طبی امداد کی ضرورت ہوتی ہے لیکن اس وقت دور دور تک نہ کوئی ماہر ڈاکٹر موجود ہوتا ہے نہ اسپتال۔ اس لئے بنیادی طبی امداد دینے کا طریقہ تو سب کو آنا چاہئے۔ ہم آپ کو کچھ ایسے طریقے بتارہے ہیں جن سے آپ خود اپنے آپ کو اور دوسروں کو بروقت طبی امداد دے کر بڑی پریشانیوں سے بچا سکتے ہیں۔ 1- خون رسنے والا زخمجسم میں ذخم ہوجائے تو اسے دل سے اوپر کی سطح پر رکھ کر صاف کریں اور مرہم پٹی کریں مثال کے طور پر ہاتھ کٹ جائے تو کوشش کریں اسے دل سے قریب اور اونچا رکھتے ہوئے مرہم لگوائیں۔ اس سے سوجن کم ہوگی۔ اگر جسم کے پچھلے حصے پر کوئی زخم آیا ہے تو پیٹھ کے بل لیٹ کر اس پہ مرہم لگوائیں۔ 

 2- جل جاناجسم کا ایسا جلنا جو بہت زیادہ سنجیدہ نوعیت کا نہ ہو لیکن اس میں تکلیف ہورہی ہو تو متاثرہ حصے کو نیم گرم پانی سے صاف کریں۔ فوری طور پر ٹھنڈا پانی یا برف لگانے سے جِلد خراب ہوسکتی ہے۔ جلا ہوا حصہ صاف کرنے کے بعد برف سے سینکائی کریں ۔ 3- شہد کی مکھی کا ڈنکاگر آپ کو شہد کی مکھی کاٹ لے تو فوری طور پر اس کا ڈنک باہر نکالنا ضروری ہے ۔ کیونکہ شہد کی مکھی کاٹتے ہوئے اپنا ڈنک آپ کی جِلد میں چھوڑ دیتی ہے اور ایسی بو خارج کرتی ہے جس سے دوسری مکھیاں بھی سونگھ کر آپ کو کاٹنے کے لئے لپکتی ہیں۔ کھرچنے یا ٹوئزر سے کھینچ کر ڈنک کو نکالنے کے بعد جلد سے جلد وہ علاقہ چھوڑ دیں۔ متاثرہ حصے کو صاف کریں اور برف سے سینکائی کریں۔ 4- فریکچرجب فریکچر کی بات آتی ہے تو اس صورت میں کبھی متاثرہ عضو کو سیدھا کرنے کی کوشش نہ کریں بلکہ اسے ہموار سطح پر رکھیں اور کوشش کریں ماہر طبی عملے کے بغیر عضو کو سیدھا نہ کیا جائے۔ 

 5- آنکھوں کے زخمآنکھوں میں زخم ہونے کی صورت میں سب سے پہلے آنکھو کو دھو لیں۔ فوری طور پر ایسا کرنا اس لئے ضروری ہے کیونکہ اگر زخم کسی انفیکٹڈ چیز یا کیمیکل جانے سے ہوا ہے تو وہ آنکھوں کو ہمیشہ کے لئے خراب بھی کرسکتا ہے۔ 6- کانٹا چبھ جائے توکانٹے جراثیم سے بھرپور ہوتے ہیں اور جسم میں داخل ہوکر نئے انفیکشنز پیدا کرتے ہیں۔ کانٹا نکالتے ہوئے متاثرہ حصے کو کسی اینٹی سیپٹک سے صاف کرلیں اس کے علاوہ جو سوئی کانٹا نکالنے کےلیے استعمال کی جارہی ہے اس کا بھی اسٹیریلائز یا ابلا ہوا ہونا ضروری ہے۔ کانٹا نکل جانے کے بعد زخم کو صابن سے اچھی طرح دھولیں۔ 7- سانپ کاٹ لے توسانپ کاٹ لے تو اس کے زہر سے بچنے کے لئے سب سے ضروری چیز خود کو پرسکون رکھنا ہوتا ہے۔ یاد رکھیں دل کی دھڑکن جتنی تیز ہوگی سانپ کا زہر اتنی ہی تیزی سے پھیلے گا۔ پین کلرز خون کو پتلا کرتی ہیں لیکن ماہر ڈاکٹر کو دکھانا سب سے ضروری ہے۔ اگر اسپتال جانا ہو تو بھی بھاگنے کے بجائے چل کر جائیں تاکہ دل کی دھڑکن تیز نہ ہو۔ ناریل کا تیل فوری لگالینے سے بیکٹیریا اور دوسرے جراثیم سے بچا جاسکتا ہے۔

0 0 vote
Article Rating
Subscribe
Notify of
guest
0 Comments
Inline Feedbacks
View all comments