ٹیلی گرام میں یہ اہم چیز موجود ہی نہیں جو کہ۔۔۔۔ واٹس ایپ کی جگہ ٹیلی گرام کو دینا چاہتے ہیں تو پہلے یہ جان لیں

واٹس ایپ کی نئی پرائیوسی پالیسی آنے کے بعد دنیا بھر سے لاکھوں صارفین ٹیلی گرام، سگنل اور دیگر پیغام رسانی کی ایپلیکیشن کی جانب منتقل ہورہے ہیں کیونکہ صارفین نجی پیغامات اور ڈیٹا محفوظ رکھنا چاہتے ہیں۔

مگر یہاں ایک چیز قابل غور اور صارفین کےلیے جاننا ضروری ہے وہ یہ کہ ہے انہیں علم نہیں کہ سگنل کے برعکس ٹیلی گرام میں اینڈ ٹو اینڈ انکرپشن بائی ڈیفالٹ نہیں۔

اینڈ ٹو اینڈ انکرپشن کا مطلب یہ ہوتا ہے کہ بھیجنے والا اور موصول کرنے والا ہی پیغامات کو پڑھ اور دیکھ سکتا ہے، ایپلیکیشن کے مالکان بھی ان پیغامات کو نہیں پڑھ سکتے۔https://googleads.g.doubleclick.net/pagead/ads?guci=2.1.0.4.2.2.0.0&gdpr=0&us_privacy=1—&client=ca-pub-0231167329385289&output=html&h=280&adk=442891077&adf=3744394867&pi=t.aa~a.134244527~i.5~rp.4&w=782&fwrn=4&fwrnh=100&lmt=1610974709&num_ads=1&rafmt=1&armr=3&sem=mc&pwprc=4181794154&psa=1&ad_type=text_image&format=782×280&url=https%3A%2F%2Fhamariweb.com%2Fnews%2Fnewsdetail.aspx%3Fid%3D3175281%26fbclid%3DIwAR2abbogRPKKbcRhK8jhryZh8Yaa3ZpOaOetLHJ2Gm_SHS8sKlotw3LWPgc&flash=0&fwr=0&pra=3&rh=196&rw=781&rpe=1&resp_fmts=3&wgl=1&fa=27&adsid=ChAIgICVgAYQ28u28_mn3OgSEi8AOLz5lKW5Ez3vVkJnX8edyrdn078VfwhpM93mY4nGxIft_NJzLFSwTMDnyEYPYw&uach=WyJXaW5kb3dzIiwiMTAuMCIsIng4NiIsIiIsIjg3LjAuNDI4MC4xNDEiLFtdXQ..&dt=1610974707722&bpp=2&bdt=1326&idt=2&shv=r20210112&cbv=r20190131&ptt=9&saldr=aa&abxe=1&cookie=ID%3De3be56d027024d5e-22d7641ea7a60051%3AT%3D1610974607%3ART%3D1610974607%3AS%3DALNI_MbE1x-fRS-d6CPxtK_8GRcf6YRG1Q&prev_fmts=0x0%2C1903x880%2C759x90_0ads_al%2C759x455&nras=3&correlator=5517069762343&frm=20&pv=1&ga_vid=957209784.1610096616&ga_sid=1610974531&ga_hid=1274521638&ga_fc=1&u_tz=300&u_his=1&u_java=0&u_h=1080&u_w=1920&u_ah=1040&u_aw=1920&u_cd=24&u_nplug=3&u_nmime=4&adx=760&ady=1291&biw=1903&bih=880&scr_x=0&scr_y=0&eid=21068769%2C21069719%2C21068785%2C21065725&oid=3&pvsid=4417229798009&pem=69&ref=https%3A%2F%2Fl.facebook.com%2F&rx=0&eae=0&fc=1408&brdim=0%2C0%2C0%2C0%2C1920%2C0%2C1920%2C1040%2C1920%2C880&vis=1&rsz=%7C%7Cs%7C&abl=NS&fu=8320&bc=31&jar=2021-01-18-12&ifi=3&uci=a!3&btvi=3&fsb=1&xpc=wShGsTE6YY&p=https%3A//hamariweb.com&dtd=1478

اگر وہ سرورز ہیک بھی ہوجائیں تو بھی صارفین کے پیغامات تک رسائی ہیکرز کے لیے جاننا ناممکن رہے گا۔https://googleads.g.doubleclick.net/pagead/ads?guci=2.1.0.4.2.2.0.0&gdpr=0&us_privacy=1—&client=ca-pub-0231167329385289&output=html&h=280&adk=442891077&adf=1765738024&pi=t.aa~a.134244527~i.7~rp.4&w=782&fwrn=4&fwrnh=100&lmt=1610974709&num_ads=1&rafmt=1&armr=3&sem=mc&pwprc=4181794154&psa=1&ad_type=text_image&format=782×280&url=https%3A%2F%2Fhamariweb.com%2Fnews%2Fnewsdetail.aspx%3Fid%3D3175281%26fbclid%3DIwAR2abbogRPKKbcRhK8jhryZh8Yaa3ZpOaOetLHJ2Gm_SHS8sKlotw3LWPgc&flash=0&fwr=0&pra=3&rh=196&rw=781&rpe=1&resp_fmts=3&wgl=1&fa=27&adsid=ChAIgICVgAYQ28u28_mn3OgSEi8AOLz5lKW5Ez3vVkJnX8edyrdn078VfwhpM93mY4nGxIft_NJzLFSwTMDnyEYPYw&uach=WyJXaW5kb3dzIiwiMTAuMCIsIng4NiIsIiIsIjg3LjAuNDI4MC4xNDEiLFtdXQ..&dt=1610974707729&bpp=1&bdt=1333&idt=1&shv=r20210112&cbv=r20190131&ptt=9&saldr=aa&abxe=1&cookie=ID%3De3be56d027024d5e-22d7641ea7a60051%3AT%3D1610974607%3ART%3D1610974607%3AS%3DALNI_MbE1x-fRS-d6CPxtK_8GRcf6YRG1Q&prev_fmts=0x0%2C1903x880%2C759x90_0ads_al%2C759x455%2C782x280&nras=4&correlator=5517069762343&frm=20&pv=1&ga_vid=957209784.1610096616&ga_sid=1610974531&ga_hid=1274521638&ga_fc=1&u_tz=300&u_his=1&u_java=0&u_h=1080&u_w=1920&u_ah=1040&u_aw=1920&u_cd=24&u_nplug=3&u_nmime=4&adx=760&ady=1615&biw=1903&bih=880&scr_x=0&scr_y=0&eid=21068769%2C21069719%2C21068785%2C21065725&oid=3&pvsid=4417229798009&pem=69&ref=https%3A%2F%2Fl.facebook.com%2F&rx=0&eae=0&fc=1408&brdim=0%2C0%2C0%2C0%2C1920%2C0%2C1920%2C1040%2C1920%2C880&vis=1&rsz=%7C%7Cs%7C&abl=NS&fu=8320&bc=31&jar=2021-01-18-12&ifi=4&uci=a!4&btvi=4&fsb=1&xpc=YhuK9fo3XO&p=https%3A//hamariweb.com&dtd=1492

تو یہ کہنا درست ہوگا کہ اینڈ ٹو اینڈ انکرپشن محفوظ میسجنگ کے لیے ضروری عنصر ہے۔

نیویارک ٹائمز کے ٹیکنالوجی رپورٹر مائیک آئزک نے ایک ٹوئٹ میں سگنل اور ٹیلیگراف کے درمیان فرق کو واضح کیا۔

انہوں نے لکھا کہ سگنل ایک کلاسیک میسنجر ہے جس میں اینڈ ٹو اینڈ انکرپڈ بائی ڈیفالٹ ہے، جبکہ ٹیلی گرام ایک سوشل نیٹ ورک پلس میسنجر کی طرح ہے جس میں اینڈ ٹو اینڈ انکرپشن بائی ڈیفالٹ نہیں۔

ایف اے کیو پیج میں بھی واضح کیا گیا کہ صارف اینڈ ٹو اینڈ انکرپٹڈ چیٹ کے لیے ‘سیکرٹ’ چیٹ کا فیچر استعمال کرسکتا ہے۔

ٹیلیگرام میں پبلک، پرائیویٹ اور سیکرٹ چیٹ موڈز ہیں۔

سیکرٹ چیٹ 2 افراد کے درمیان ہوتی ہے، جس کا مطلب یہ ہے کہ ٹیلیگرام کی پرائیویٹ گروپ یٹس اینڈ ٹو اینڈ انکرپٹڈ نہیں۔

اس کے مقابلے میں سگنل بائی ڈیفالٹ اینڈ ٹو اینڈ انکرپٹڈ ہے، بالکل واٹس ایپ کی طرح ہے۔

0 0 votes
Article Rating
Subscribe
Notify of
guest
0 Comments
Inline Feedbacks
View all comments