بچوں کو کتنے دن اسکول آنا ہو گا؟ تعلیمی اداروں سے متعلق سعید غنی کا اہم بیان سامنے آگیا

صوبائی وزیرتعلیم سندھ سعید غنی کا کہنا ہے کہ نویں تا12ویں جماعت میں پڑھائی جاری ہے، بقیہ تعلیمی ادارے بھی یکم فروری سے کھلنے جا رہے ہیں ،ایس او پیز کے تحت 50 فیصد بچے آیا کریں گے، ان کا کہنا ہے کہ ایک بچے کو ہفتے میں 3 دن پڑھائی کیلئے تعلیمی ادارے آنا ہوگا۔

ایجوکیشن اسٹیرنگ کمیٹی کے اجلاس کے بعد میڈیا سے گفتگو میں وزیر تعلیم سندھ سعید غنی نے بتایا کہ اجلاس میں تعلیمی صورتحال کا جائزہ لیا گیا ہے، اجلاس میں اتفاق ہوا کہ امتحانات وقت اور حالات دیکھ کر ہی لیے جائیں گے۔

سعیدغنی کا کہنا تھا کہ امتحانات سے قبل 60 فیصد نصاب کو بہتر انداز میں پڑھایا جائے،امتحانات میں تاخیر ہی کیوں نہ کرنی پڑے 60 فیصد سلیبسس پڑھانا ضروری ہے،اس سال کسی بھی صورت بغیر امتحانات طلبا کو پروموٹ نہیں کیا جائے گا۔

وزیر تعلیم نے بتایا کہ اسٹیرنگ کمیٹی کا اگلا اجلاس 30 جنوری کو ہوگا،جامع تعلیمی پلان برائے 21-2020اور22-2021 کی تیاری کیلئے کمیٹی بنائی ہے، کمیٹی تعلیمی اداروں میں پڑھائی کی مدت، امتحانات کا شیڈول اور نتائج کی تاریخ پر سفارشات تیار کرے گی۔

سعیدغنی نے کہا کہ کمیٹی رواں تعلیمی سال اور اگلے تعلیمی سال کا شیڈول ایک ہفتے میں دے گی،کمیٹی میں سیکریٹری اسکولز، کالجز، یونیورسٹیز کے نمائندے اور تعلیمی بورڈ کے چیئرمین شامل ہوں گے۔

0 0 vote
Article Rating
Subscribe
Notify of
guest
0 Comments
Inline Feedbacks
View all comments